Contest for Chairman Auqaf Committee Hathlangoo, Apple seems to have the upper hand

Image
  Apple 🍎 seems to have the upper hand The people of Hathlangoo (Generally famous as the village of Famous Saint, Haba Sahab) and people also name the village as Haba Sahbi Hathlung. General Auqaf Committee Hathlangoo has been a strong decision making committee and looking after the development and other things in the village. Now after the resignation of Chairman who has completed his tenure, Hathlangoo is going for polls to elect the next Chairman. 3 candidate have filed their nominations namely Mr. GH Hassan Lone ( a business taikoon of the village), Mr. Mohammad Munawar Wani and Mr. Mohammad Hussain Dar (ex Chairman). Although it seems that Mr. GH Hassan has the upper hand because the youth of village have a good belief in him, but the contest looks like a bit hard as Mr. Munawar is making his all efforts by campaigning throughout the village. The war has already begun but it looks like contest only between Mr. GH Hassan whose symbol is Apple(🍎) and Mr. Mohammad Munawar Wani as t

امن معاہدے کے بعدپہلا بم دھماکہ،سابق صدرکرزئی بچ گئے،درجنوں ہلاک وزخمی

کابل-افغانستان کے دارالحکومت کابل میں سیاستدانوں کے ایک اجتماع میں بم دھماکے سے27افراد ہلاک جبکہ 29زخمی ہوگئے ہیں جبکہ سابق صدر حامد کرزئی اورچیف ایگزیکٹو عبداللہ عبداللہ محفوظ رہے۔افغان میڈیا کے مطابق دھماکہ اس وقت ہوا جب افغان دارالحکومت کابل میں ایک تقریب جاری تھی۔یہ دھماکہ دوحہ میں امریکااور افغان طالبان کے درمیان ہونے والے مذاکرات کے بعدکابل میں ہونے والا پہلا خونریز دھماکہ ہے۔

افغانستان کی سیاسی جماعت حزب وحدت کے رہنما عبدل علی مزاری کی برسی کی مناسبت سے ہونے والی اس تقریب میں افغانستان کے چیف ایگزیکٹو عبداللہ عبداللہ اور دیگر نمایاں سیاسی شخصیات شریک تھیں اور اعلیٰ سطح کی امن کونسل کے سربراہ محمد کریم خلیلی خطاب کررہے تھے۔
افغان وزارت داخلہ کے ترجمان نصرت رحیمی کا کہنا ہے کہ اب تک ستائیس افراد کے انتقال کی تصدیق ہوچکی ہے جبکہ انتیس زخمی ہیں۔
ترجمان کے مطابق حامد کرزئی، عبداللہ عبداللہ اور دیگر سینئر رہنما محفوظ ہیں اور اب اپنے گھروں کو منتقل ہوچکے ہیں۔رپورٹ کے مطابق دھماکے سے قبل مسلح افراد نے گولیاں چلائیں جس کے بعد بھگدڑ مچ گئی جبکہ سینئر قیادت کو محفوظ مقام پر منتقل کیاگیا۔
تاحال کسی گروپ نے دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی جبکہ افغان طالبان نے اس دھماکے سے لاتعلقی کااظہارکیاہے۔
یاد رہے گزشتہ سال بھی برسی کی تقریب پر یہاں دھماکہ ہوا تھا جس میں گیارہ افراد لقمہ اجل بنے تھے۔

Comments

Popular posts from this blog

Covid-19:- 775 deaths, 24506 cases-India

Kashmir University Recruitment 2020, Walk in Interview on 09-03-2020